آج اُن سے ملنے کو دل چاہتا ہے

آج اُن سے ملنے کو دل چاہتا ہے

Dim:4000 x 3200 pix

Res:300 dpi

RGB Colours 8 bit

آج اُن سے ملنے کو دل چاہتا ہے
پاس بیٹھ کر بات کرنے کو دل کرتا ہے
اتنا حسین تھا اُن کا منانے کا انداز
آج پھر روٹھ جانے کو دل کرتا ہے

خوشی ملی تو ہنس نہ سکے
غم ملے تو رو نہ سکے
زندگی کا یہ دستور ہے
جسے چاہا اُسے پا نہ سکے
اور جسے پایا اُسے چاہ نہ سکے

مسکرانا تھا پر مسکرا نہ سکے
گیت خوشیوں کے ہم گا نہ سکے
پرائے تو کبھی اپنے بن نہ سکے
ہم اپنوں کو بھی اپنا بنا نہ سکے

فاصلوں نے دل کی قربت کو بڑھا دیا ہے
آج ان کی یاد نے بے سبب رُلا دیا ہے
ان کو شکوہ ہے کہ ہمیں انکی یاد نہیں آتی
اور ہم نے اُن کی یاد میں خود کو بُھلا دیا ہے

Advertisements

Don't Forget to leave your Comment

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

Jan

January 2012
M T W T F S S
    Feb »
 1
2345678
9101112131415
16171819202122
23242526272829
3031  

Subscribe Us by Clicking

%d bloggers like this: